بھارت کا راوی کا پانی خود استعمال کرنیکا منصوبہ، پاکستان میں بحران کا خدشہ
| |
Home Page
اتوار 28 شوال المکرم 1438ھ 23 جولائی 2017ء
May 19, 2017 | 12:00 am
بھارت کا راوی کا پانی خود استعمال کرنیکا منصوبہ، پاکستان میں بحران کا خدشہ

Todays Print

نئی دہلی (ایجنسیاں)بھارت نے پاکستان کے دریائے راوی کا ساڑھے دس لاکھ ایکڑ پانی روک کر خود استعمال کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔پاکستان کے اس پانی کو مقبوضہ کشمیر اور بھارتی پنجاب میں برابر تقسیم کیا جائے گا۔ایک بھارتی اخبار کا کہنا ہے کہ مودی سرکار منصوبے کے مطابق روکا جانے والا پانی بیراجوں اور ڈیموں کے ذریعے مقبوضہ جموں کے کٹھوعہ اور سامبا اضلاع کو فراہم کیا جائے گا۔اس مقصد کے لیے جموں اور پنجاب کی سرحدوں پر ڈیم بنائے جائیں گے، پھر بیراجوں اور نہروں کے ذریعے پاکستان جانے والے پانی کو روک کر بھارت اسے اپنے زرعی مقاصد کے لیے استعمال کرے گا۔دوسری جانب پانی کو روک کر تھیئن ڈیم کے ذریعے بھارت 180میگا واٹ بجلی بھی پیدا کرے گا ۔ معاہدے پر بھارتی پنجاب اور مقبوضہ کشمیر کی ریاستوں نے 4 مارچ کو دستخط بھی کردئیے ہیں ۔بھارت کے سیکریٹری آب پاشی اورفیلڈ کنٹرول سہراب بھگت نے بتایا کہ اس سے جموں و کشمیر کے 1100 ایکڑ بنجر علاقے کو زرخیز بنایا جاسکے گا۔ان کا کہنا تھا کہ اس طرح ہمیں تقریبا اتنا ہی پانی مزید مل جائے گا جو دریائے چناب سے نکلنے والی رنبیر کینال سے حاصل ہوتا ہے۔اس منصوبے پر دو کھرب اٹھائیس ارب روپے لاگت آئے گی۔