| |
Home Page
اتوار یکم رمضان المبارک 1438ھ 28 مئی 2017ء
افضال ریحان
May 28, 2017
انسداد دہشت گردی کا عالمی مرکز

بظاہر آج ہمیں بجٹ اور رمضان شریف کی آمد پر قلم اٹھانا چاہئے لیکن جس موضوع پر سبھی لکھ رہے ہوں یا محض الفاظ کی جگالی ہو رہی ہو اس سے پرہیز ہی بہتر ہے اپنی تو ہمیشہ سے یہ سوچ رہی ہے کہ مکھی پر مکھی مارنے کی بجائے جس ایشو کو نظر انداز کیا جا رہا ہو یا اس کے کسی مخصوص پہلو سے پہلو تہی کی جا رہی ہو غیر روایتی اسلوب میں اس کا تنقیدی جائزہ...
May 25, 2017
شدت پسندی کا مائنڈ سیٹ؟

یہاں ہم جنرل باجوہ کے بیٹے کی تحسین اپنا اخلاقی فریضہ سمجھتے ہیں جن کی سوچ نسلِ نو کے لیے نئی امید ہے وہ کتنی بڑی بات کتنے سادہ پیرائے میں بیان کر گئے ’’ڈان لیکس پر پہلا فیصلہ کیا تو میرے بیٹے نے کہا کہ آپ نے ایک مقبول لیکن غلط فیصلہ کیا ہے جب دوسرا فیصلہ کیا تو بیٹے نے کہا کہ آپ نے غیر مقبول مگر درست فیصلہ کیا ہے آج کی نوجوان نسل...
May 21, 2017
انتہا پسندی کو مسترد کرنے میں نوجوانوں کا کردار

آج تین موضوعات اپنی طرف کھینچ رہے ہیں اول بھارتی شہری کی سزا کے خلاف عالمی عدالت کا فیصلہ، جس پر ہمارے جذباتیت پھیلانے کے ٹھیکیدار مخصوص میڈیا نے ایک طوفان بپاکر رکھا ہے۔ احمقانہ پروپیگنڈے کے حصہ بننے اور جھوٹ لکھنے پر ضمیر نہیں مان رہا جبکہ سچائی لکھیں تو ہضم نہ ہوسکے گی، اس لئے چھوڑ دیتے ہیں۔ دوسرا موضوع امریکی صدر ٹرمپ کا...
May 18, 2017
نیو سلک روڈ اور علاقائی امن و سلامتی؟

تاریخی و تہذیبی حوالے سے اس خطے میں شاہراہِ ریشم (سلک روڈ) کی جو معاشی اہمیت رہی ہے وہ تاریخ کا حصہ ہے اور اسی کے بطن سے چینی صدر شی چن پنگ کی اس ویژنری سوچ نے جنم لیا ہے۔ جسے آج کی دنیا ون بیلٹ ون روڈ کے الفاظ سے سن رہی ہے۔ ون بیلٹ سے مراد مخصوص پٹی یا خطہ ہے تو روڈ سے مراد تعمیر و ترقی کا نیا سفر ہے۔ دنیا میں ترقی کی نئی راہیں کھولنے...
May 14, 2017
وزیراعظم فائنل اتھارٹی ہیں؟

دو بڑوںنے اپنی ملاقات میں بڑے پن کا مظاہرہ کیا اور جسے ان ہونی کہا جا رہا تھا اُسے خوش اسلوبی سے ہونی میں بدل دیا۔ عسکری ادارے کے تحفظات دور کرنے کیلئے وزارتِ داخلہ نے فوری نوٹیفکیشن جاری کیا اور سویلین حکومت کے خدشات و اعتراضات دور کرنے کیلئے فوج نے ٹویٹ واپس لے لیا ،ڈی جی آئی ایس پی آر کے یہ الفاظ واضح اور اطمینان بخش ہیں کہ...
May 11, 2017
جذباتیت کے مفاسد؟

انسانی احساسات شعوری استدلال اور جذبات سے نمو پاتے ہیں ۔ اچھے یا برُے جذبات ہی انسان کو کچھ کر گزرنے پر ابھارتے ہیں لیکن اگر کوئی فرد یا گروہ ان جذبات کا اسیر ہو جائے یا انہیں اپنے اوپر مسلط کر لے تو سوچنے سمجھنے کی شعوری صلاحتیں جام ہو جاتی ہیں اسی کیفیت کا نام جذباتیت ہے اور یہ اتنی خطرناک ہوتی ہے کہ لوگوں کو ان کے مفاسد کا ادراک...
May 04, 2017
آزادیٔ اظہار اور ڈان لیکس

اختلاف رائے کوئی بری چیز نہیں ہے یہ شعور اور اعتماد کی علامت ہے انسان اور غیر انسان میں فرق شعور کا ہے جب شعور بڑھے گا علم و آگہی آئے گی تو رائے کے اختلاف کو بھی ساتھ لائے گی۔ اسی لئے اختلاف رائے کو جمہوریت کا حسن قرار دیا جاتا ہے جبکہ آمریتوں میں جبر کی طاقت سے مخالفانہ نقطۂ نظر کو دبا دیا جاتا ہے لیکن اس کا یہ مطلب بھی نہیں ہے کہ...
April 30, 2017
جمہوریت کی جڑیں کھوکھلی کرنے والے؟

ان دنوں احباب اکثر یہ پوچھتے ہیں کہ ملکی حالات کدھر جا رہے ہیں؟حکومت کا کیا بنے گا؟ ڈان لیکس کا نتیجہ کیا نکلے گا؟سول ملٹری تعلقات کیا رخ اختیار کریں گے؟ وغیرہ ان سوالات کے جو بھی جوابات دیئے جائیں ایک بات واضح ہے کہ وطنِ عزیز کے سیاسی حالات کی مناسبت سے ایک نوع کی بے یقینی ضرور پائی جاتی ہے۔ لوگوں کو ایسے خدشات ہیں کہ مبادا حالات...
April 27, 2017
شام میں روس اور امریکہ کی پراکسی وار؟

کائنات کی یہ ایک مسلمہ حقیقت ہے کہ جنگیں مسائل کا حل نہیں باعث ہیں۔ جنگیں چاہے کتنے ہی مثبت جذبوں سے لڑی جائیں ان میں گنہگار ہی نہیں بے گناہ بھی مارے جاتے ہیں۔ اس لیے انسانیت سے محبت کرنے والا کوئی بھی شخص ان کی حمایت نہیں کر سکتا۔ اجتماعی انسانی شعور صدیوں کا سفر طے کرتے ہوئے آج ’جیو اور جینے دو‘ کے اس مقام پر پہنچا ہے، جمہوریت،...
April 23, 2017
انوکھا اور دلچسپ فیصلہ؟

رزا غالب نے کیا خوب کہا ہے کہ بہت شور سنتے تھے پہلو میں دل کا....جو چیرا تو اک قطرہ خوں نکلا۔ بہت شور تھا کہ پوری قوم انتظار کی سولی پر لٹکی ہوئی ہے۔ قوم میڈیا کے بخار سے اگر شوقیہ لٹکتی ہے تو اس پر کیا کہا جا سکتا ہے۔ کیا اب درویش یہ پوچھ سکتا ہے کہ عدالتی فیصلہ آنے کے بعد بھی قوم انتظار کی سولی پر کیا ویسی ہی لٹکی ہوئی نہیں ہے؟ ہمارا...
April 20, 2017
پراکسی نہیں ڈپلومیسی؟

امریکی قومی سلامتی کے مشیر نے کہا ہے کہ ’’پاکستان کے لیے یہی بہتر ہے کہ وہ افغانستان سمیت کہیں بھی پراکسی میں نہ پڑے اس کے برعکس ڈپلومیسی یعنی سفارت کاری کی راہ اپنائے۔ طالبان کے تمام دھڑوں کے خلاف کارروائی کرے دہشت گردوں کے خلاف بلا تفریق کارروائی پاکستان کے اپنے مفاد میں ہے‘‘۔ امریکی قومی سلامتی کے مشیر کا یہ مفت مشورہ بظاہر...
April 16, 2017
قانون ہاتھ میں لینے کا حق کسی کو نہیں

باچا خاں اور خاں عبدالولی خاں کتنے بڑے انسان تھے جنہوں نے ساری زندگی عدم تشدد اور انسان دوستی کا پیغام دیا لیکن ان مبارک ناموں سے منسوب یونیورسٹیوں میں انسانیت کا خون کتنی بے دردی سے بہایا گیا ہے۔ اگر وہ ظلم و بربریت کا یہ منظر اپنی آنکھوں سے دیکھ لیتے تو ایسی زندگی انہیں موت سے بدتر محسوس ہوتی۔ باچا خاں یونیورسٹی میں دہشت گردوں...
April 13, 2017
پاک، ہند اور بنگلہ دیش تعلقات؟

کسی بھی قوم کی خارجہ پالیسی اُس کے قومی مفادات اور اعلیٰ قومی آدرشوں کی عکاس ہوتی ہے، یہ پالیسی اگر جامد نہیں ہونی چاہئے تو موم کی ناک جیسی بھی نہیں ہونی چاہئے بلکہ اس میں استحکام و پائیداری کی جھلک کے ساتھ بدلتے عالمی و علاقائی حالات کے ساتھ ہم آہنگی کی صلاحیت دکھائی دینی چاہئے۔ وطنِ عزیز کی خارجہ پالیسی کے حوالے سے ہمیں بہت سی...
April 09, 2017
جمعیت علما ئے ہند سے مولانا فضل الرحمٰن تک؟

وطن عزیز کی دینی سیاست پر ایک سو ایک اعتراضات کئے جا سکتے ہیں بالخصوص مولانا مودودی کی جماعت جس نوع کی سیاست کر رہی ہے اس پر تو خود جماعت کے اپنے سابق امیر میاں طفیل محمد صاحب بھی چیخ اٹھے تھے۔ اس طرح مولانا مفتی محمود کی جمعیت العلمائے اسلام جو خود کو جمعیت العلمائے ہند کی جانشین قرار دیتی ہے، خاص طور پر جمعیت کے موجودہ امیر مولانا...