| |
Home Page
اتوار یکم رمضان المبارک 1438ھ 28 مئی 2017ء
اجمل خٹک کثر
May 28, 2017
قومی یکجہتی اور اسفندیار ولی کا خطاب

گزشتہ اتوار اے این پی سندھ کے نام رہا۔ اس روز 21مئی2017ء کو پارٹی کے صوبائی سربراہ سینیٹر شاہی سید نے گزشتہ6 برس سے اے این پی پر لاگو غیر اعلانیہ پابندی توڑنے کا اعلان کیا تھا۔ پارٹی کے سربراہ اسفندیار ولی خان، جس کے لئے علالت کے باوجود پختونخوا سے کراچی آئے تھے۔ سیکرٹری جنرل میاں افتخار حسین بھی آپ کے ہم رکاب تھے۔ اے این پی جو...
May 22, 2017
دو ستارے، یونس خان ، مصباح الحق نیازی

مایہ ناز یونس خان پاکستان کی جانب سے ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے زیادہ 10099رنز سمیت متعدد ریکارڈ لئے دنیائے کرکٹ کو خیرباد کہہ گئے۔ ڈومینیکا ٹیسٹ کے پانچویں دن آخری بار جب وہ قابلِ فخر مصباح الحق کے ہمراہ میدان میں داخل ہوئے، تو پاکستانی کرکٹرز نے قطار بنا کر اپنے ہیروز کو خراج تحسین پیش کیا۔ اس سے قبل پاکستانی ڈریسنگ روم کا منظر بھی...
May 20, 2017
تائب مجاہدین کے پاکستانی سہولت کار!

5مئی کو موقر انگریزی روزنامے کے انٹرنیشنل صفحہ پر 5کالمی ایک تصویر ہے۔ جس میں کسی بات پر قہقہے کے بعد افغان صدر اشرف غنی، حامد کرزئی، عبداللہ عبداللہ، عبدالرسول سیاف اور گلبدین حکمت یار مسکراتے ہوئے کابل میں داخل ہورہے ہیں۔ یہ تصویر حکمت یار کی کابل واپسی پر ان کے استقبال کے موقع پر لی گئی ہے۔ تصویر میں اشرف غنی کے ماسوا تمام وہ...
May 14, 2017
خوشحال خان خٹک اور پاکستان ریلوے

انگریز جب ہندوستان آئے تو انہوں نے پختونوں سے بلا واسطہ رابطہ پیدا کرنے کیلئے ان کی زبان سیکھنے کی ضرورت محسوس کی اور نصابی کتب کے علاوہ زبان و ادب میں بھی دلچسپی لی۔دراصل یہ ایک نہایت گہری سیاسی مہم تھی ۔بیرونی طاقتیں اس خطے میں اپنا اثر ورسوخ بڑھانے میں دلچسپی رکھتی تھیں، روس بھی اس سلسلے میں پیش پیش تھا لیکن ا نگریزشاطر اس دوڑ...
May 10, 2017
مشال کیس، اے این پی سے چند سوالات

ہفتہ رفتہ میں پختونخواجانا نصیب ہوا تو ایسا محسوس ہوا کہ پورا صوبہ مشال خان کے قتل کے واقعہ کے تاحال زیراثر ہے۔ عام لوگوں کی بات تو نہیں کرتے مگر جو صاحبانِ فکرونظر ہیں خواہ ان کا تعلق سیاست وتعلیم سمیت زندگی کے کسی بھی شعبہ سے ہو، ان کی غالب اکثریت دل گرفتہ ہے۔ واقعہ میں سیاسی ومذہبی جنونیوں کا کردار کیا تھا یا سماج نےکس بے حسی...
April 23, 2017
پھر کس پر سنگ اُٹھائوگے!

پاناما کے فیصلے پر سیاستدانوں کا غوغا اپنی جگہ!زندہ مگر بے روح اختیار مندوں سے مشال کی روح کا یہ سوال۔لائو تو قتل نامہ مرا میں بھی دیکھ لوںکس کس کی مہر ہے سرِ محضر لگی ہوئیتاحال تشنہ جواب ہے۔ عمران خان سے لے کر مولانا فضل الرحمٰن تک سب کہہ رہے ہیں، سازش ہے، مگر کسی میں یہ جرات اظہار نہیں کہ وہ بتائیں کہ یہ سازش کس نے کی! مشال کے معنی...
April 16, 2017
عمران خان ، مریم اورنگزیب اورنظامِ تعلیم

تحریک انصاف کے سربراہ، عمران خان کا کہنا ہے کہ ’’ایک قوم بنانے کے لئے ہمیں تین مختلف نظام تعلیم ختم کرنا ہوں گے۔‘‘ جہاں اس بیان سے قومی تفریق و انتشار کے خاتمے کے لئے ایک قابل عمل راہ کی نشاندہی ہوتی ہے۔ وہاں اس سےیہ بھی عیاں ہوتا ہے کہ دیو ہیکل بنیادی مسائل پر خان صاحب کی کتنی گہری نظر ہے۔خیبر پختونخوا میں تعلیمی اصلاحات کے...
April 13, 2017
جے یو آئی کا اجتماع، کچھ بین السطور

جمعیت علمائے اسلام کا صد سالہ عالمی اجتماع مولانا فضل الرحمن کی کرشماتی شخصیت کا بے نظیر عکس بنا، اختتام پذیر ہوچکا ہے۔ صاحبانِ علم و حکمت ہی جانتے ہیں کہ اس اجتماع کےاتحادِ امت پر کیا اثرات مرتب ہوں گے، بالخصوص دیگر سمیت پاکستان کا اکثریتی بریلوی مسلک جب اجتماع میں موجود نہیں تھا۔مولانا صاحب افغان طالبان کی ’جدوجہد‘ کو حق...
April 09, 2017
پنجاب یونیورسٹی، حکومت اور پختون طلبہ

گاہے گاہے پختونوں کی تاریخ و تمدن، سیاست و سیادت پر اپنے ٹوٹے پھوٹے الفاظ میں طبع آزمائی کامقصد فقط اہل وطن کو ان سے روشناس کرانا ہوتا ہے۔ ہم سب ایک دوسرے کو جانتے و مانتے ہیں، تاہم افغان (سوویت یونین، امریکا) جنگ تا امروز اس پورے خطے میںچونکہ پختون ہی مشق ستم بنے نظر آتے ہیں۔ اسلئے لوگ اور جاننا چاہتے ہیں۔ لہٰذاہم حالات حاضر ہ...
April 02, 2017
پارلیمان’ بزدل فقط خواب دیکھتے ہیں‘

’’منصوبے کے تحت زرداری صاحب عسکری قیادت کے باب میں محتاط ہیں۔ اگر یہ اندازہ درست ہے تو فوجی عدالتوں کے باب میں رضا ربانی کی شعلہ بیانی، محض گرم گفتاری ثابت ہوگی۔ یوں بھی موصوف گرجتے ہیں برستے کبھی نہیں۔ بزدل لوگ بہادری کا فقط خواب دیکھا کرتے ہیں....‘‘یہ سطور ممتاز کالم نگار ہارون الرشید صاحب کے اُس کالم سے ماخوذ ہیں جو انہوں نے ...
March 30, 2017
حیدرآباد میں جشن، تھر میں ماتم

اتوار کو ایک دوست کے ہاں پہنچا تو ٹی وی اسکرین پر شرجیل میمن صاحب چہچہارہے تھے اور بے چارے عوام جو،اب مرور ایام کے ساتھ ’مونث‘ یعنی بے چاری عوام ہیں، جشن منارہےتھے۔ پیپلز پارٹی کے یہ رہنما دبئی کے ’دورے‘ کے بعد حیدرآباد پہنچے تھے۔ مرحوم و مغفور جمیل الدین عالی صاحب کا ایک کالم روزنامہ جنگ میں شائع ہوا تھا جس میں انہوں نے لغت پر...
March 26, 2017
اسامہ کا زندہ رہنا کیا قومی مفاد تھا ؟

حسین حقانی صاحب کے مضمون پر خیالات کی رعنائی اور ان کےکردار پر انگشت نمائی کا سلسلہ شاید پیہم دراز رہتا تاہم حب الوطنی کے اسناد کی تقسیم پر فائزایسے خود ساختہ فائق حسبِ ماضی و حسبِ توقع’ پزیرائی‘ نہ ملنے پر رفتہ رفتہ اپنی دکان سمیٹنے پر مجبور نظر آتےہیں۔ وجہ ظاہر و باہر یہ ہے کہ اس سارے کشالے کی سزا و جزا ماضی دیکھ چکا ہے۔ کون...
March 19, 2017
عمران خان کا ستارہ گردش میں

سابق گورنر جنرل اور پاکستان کے پہلے صدراسکندر مرزا اپنیBiography (سرگزشت )میں بتاتے ہیں’’قائد اعظم نے مجھ سے کہا کہ پاکستان میں نے اور میرے اسٹینو گرافر( ٹائپ رائٹر) نے بنایا‘‘ بانی پاکستان کا یہ ارشاد گرامی بھی معروف ہے کہ میری جیب میں کھوٹے سکے ہیں۔قائد اعظم کی رحلت کے بعد مسلم لیگیوں نے اپنے عمل سے اس قول کو سچا ثابت بھی...
March 12, 2017
مسئلہ دہشت گرد نہیں ،دو رنگی ہے

ہمارا اصل مسئلہ دہشت گرد نہیں، ہماری دو رنگی ہے۔ ہم جو ہیں وہ مانتے نہیں، اور جو نہیں ہیں اس پر اصرار کرتے ہیں۔ ایسا اضطراری نہیں اختیاری ہے۔ اضطراری ہوتا، تو اس نفسیاتی عارضے کا علاج ہوہی جاتا، لیکن چونکہ اختیاری ہے، سو خواہ کتنے ہی آپریشن کئے جائیں، جڑ زمین سے باہر آنے سے رہی۔ مثلاً ہمارا وہ طبقہ جو مذہب پرست کہلاتا ہے،...