| |
Home Page
منگل 28 جمادی الثانی 1438ھ 28 مارچ 2017ء
عطا ء الحق قاسمی
روزن دیوار سے
March 27, 2017
کیا ہندوستان پاگل ہو گیا ہے؟

میں ان لوگوں میں ہوں جو ہندوستان کے ساتھ بہترین تعلقات چاہتے ہیں، میں باہمی تجارت کے حق میں ہوں اور ویزے میں نرمی کا بھی حامی ہوں۔ میرے نزدیک ایک دوسرے کے ساتھ اچھے ہمسایوں کی صورت میں رہنے کے نتیجے میں دونوں ملک ترقی کریں گے۔ عوام کو خوشحالی نصیب ہو گی، مگر اس کے لئے ضروری ہے کہ کشمیر کا مسئلہ، اولین ترجیح کے طور پر ایجنڈے میں رکھا...
March 25, 2017
ایک لاعلاج خدائی ’’خدمت گار ‘‘....!

میرا ایک دوست ’’خدائی خدمت گار‘‘ قسم کی چیز ہے ہر وقت لوگوں کی خدمت پر کمربستہ رہتا ہے۔چنانچہ اس کی یہ شہرت سن کر وہ لوگ بھی اس کے پاس اپنے مسائل لیکر آ جاتے ہیں جنہیں وہ جانتا ہی نہیں ہوتا۔میرا یہ دوست صاحب اختیار نہیں ہے لیکن صاحب اعتبار ہونے کی وجہ سے وہ اگر متعلقہ افسر تک کسی جان پہچان کے بغیر سائل کا مسئلہ پہنچا دیتا ہے اور...
March 24, 2017
خوشیوں بھرا دن!

مجھے حیرت ہوتی ہے ان لوگوں پر جو شکم پروری کے بعد پاکستان کو برا بھلا کہنے لگتے ہیں۔ برصغیر کے مسلمانوں نے جو اکثریت کے استحصالی رویے سے تنگ آئے ہوئے تھے، حضرت قائداعظمؒ کی قیادت میں 23مارچ 1940کو قراردادِ پاکستان منظور کی اور اس کے سات سال میں 14اگست 1947کو اس خواب کی تعبیر بھی دیکھ لی۔اپنی بات جاری رکھنے سے پہلے میں اپنے چند فیشن ایبل...
March 23, 2017
ایک معزز شخص کی وفات!

اس کی عمر کچھ ایسی کم بھی نہیں تھی یعنی یہی کوئی 72,70 سال مگر اس کے سینے میں ایک 18سالہ نوجوان کا دل دھڑکتا تھا۔ وہ بہت زندہ دل مگر بہت دردمند بھی تھا۔ وہ دوستوں کی محفلوں میں ایسے قہقہے لگاتا جیسے الہ دین کے چراغ کا روایتی جن دھوئیں میں سے نمودارہوتے ہوئے لگاتا ہے۔ اسے اپنا کوئی ذاتی غم نہیں تھا جس پر وہ اپنے اللہ تعالیٰ کا شکر دن میں...
March 20, 2017
اپنی اوقات میں رہو !

آج شام چار بجے برادرم کیپٹن عطا محمد خان اور عزیز خرم شاہ نے مجھے ملنے میرے دفتر میں آنا تھا اس وقت چار بجکر پچیس منٹ ہو گئے ہیں مگر وہ ابھی تک نہیں آئے میں نے سوچا کہ ان کے آنے تک کالم کیوں نہ لکھ لوں چنانچہ میں کاغذ قلم لیکر بیٹھ گیا ہوں اور ان لمحوں میں پچاس ساٹھ سال پیچھے چلا گیا اور مجھے بہت کچھ یاد آ رہا ہے ایک تو یہ وزیر...
March 17, 2017
غنودگی کے عالم میں لکھا گیا ایک اور کالم

کبھی کبھی مجھ پر غنودگی سی طاری ہوجاتی ہے اور عجیب بات یہ ہے کہ یہ طاری اس وقت ہوتی ہے جب میں صبح اپنے مقررہ وقت سے بہت پہلے جاگ جاتا ہوں مگر کم نیند کے باوجود خود کو بے انتہا تروتازہ محسوس کرتا ہوں تاہم اس تروتازگی کی عمر صرف دو گھنٹے ہوتی ہے۔ اس کے بعد میرا سارا دن غنودگی میں گزرتا ہے۔ میں اس وقت اسی غنودگی کی کیفیت میں ہوں کیونکہ...
March 16, 2017
ایک دور اور ایک پرندے کی کہانی!

جب کبھی ماڈل ٹائون سے میرا گزر ہوتا ہے، اور ایچ بلاک میں فیض صاحب کے گھر کے سامنے سے گزرتا ہوں تو مجھے اس رہگزر سےبھی ان کی من موہنی شاعری اور ان کی دلربا شخصیت کی خوشبو آتی ہے۔ ذرا آگے جی بلاک میں گھنے درختوں کے درمیان حفیظ جالندھری کی کوٹھی نظر آتی ہے تو ان کا لازوال قومی ترانہ اور باکمال شاعری کے علاوہ مجھے محسوس ہوتا ہے کہ میں...
March 11, 2017
عمران خان کا پھٹیچر اسکینڈل!

عمران خان نے لاہور میں منعقد ہونے والے پی ایس ایل کے فائنل میں شرکت کے لئے غیر ملکی کھلاڑیوں کی آمد پر ان کےلئے نازیبا کلمات کیا کہے اور انہیں ’’ریلوکٹا‘‘ اور پھٹیچر کے ’’خطابات‘‘ سے ’’خوش آمدید‘‘ کیا کہا، پورا میڈیا ان کے پیچھے ہاتھ دھو کر پڑ گیا، خود عمران خان کے پیروکار بھی عمران کے اس رویے سے آزودہ نظر آئے۔میرا...
March 10, 2017
باقی آپ خود سمجھدار ہیں!

آج پھر ایک اہم قومی مسئلہ درپیش ہے اور اس کا تعلق اس تصویر سے ہے جو میرے کالم کے ساتھ شائع ہوتی ہے۔ اس سے پہلے میری جو تصویر شائع ہوتی تھی اس میں عمومی طور پر میں مسکراتا دکھائی دیتا تھا۔ عمومی طور پر اس لئے میری ملین ڈالر مسکراہٹ والی یہ تصویر مونا لیزا کی تصویر کی طرح تھی، یعنی دیکھنے والا اسے جس زاویے سے دیکھتا تھا یہ اسے ایسی ہی...
March 09, 2017
پبلک ریلیشننگ۔ چہروں پر غازہ یا کالک ملنے کا صحیح طریقہ

پبلک ریلیشننگ کا فن غالباً بہت پرانا ہے اور فرض کریں اگر یہ اتنا پرانا نہیں تو اسے ہونا چاہئے تھا ۔ اگر یہ فن پرانے زمانے میں بھی اتنا ہی مقبول ہوتا جتنا ان دنوں ہے تو لوگ بہت سی قباحتوں سے بچ جاتے مثلاً سکندر اور پورس میں لڑائی کی نوبت ہی نہ آتی بلکہ اس کی جگہ یوں ہوتا کہ ان دونوں سورمائوں کے پبلک ریلیشنز آفیسر اپنی اپنی...
March 06, 2017
گلی ڈنڈے سے کرکٹ تک !

مجھ سے زیادہ بور دنیا میں اور کون ہو سکتا ہے کہ سارا پاکستان اس وقت کرکٹ کرکٹ کر رہا ہے اور مجھ بور کو کرکٹ سے دلچسپی ہی کوئی نہیں۔ میں تھوڑا سا مبالغہ کر گیا ہوں، دلچسپی ہوتی ہے مگر صرف اس وقت جب میچ پاکستان اور انڈیا کے درمیان ہو مگر پرابلم یہ ہے کہ پاکستان کو ہارتا دیکھ نہیں سکتا چنانچہ جب کبھی ایسی صورت حال پیدا ہوتی ہے، کرکٹ سے...
March 04, 2017
پطرس بخاری کی سائیکل کے بعد ایک اور سائیکل

میں آج آپ کو ایک بہت درد بھری داستان سنانا چاہتا ہوں۔ اگر آپ رونے دھونے کے شوقین ہیں تو میری یہ تحریر ضرور پڑھیں ۔دراصل سائیکل کے ساتھ میرا رشتہ بہت پرانا ہے لیکن اس کے ساتھ میری کوئی خوشگوار یاد وابستہ نہیں ہے۔ چنانچہ مجھے افسوس ہے کہ میں صبح صبح یہ ناخوشگوار یادیں اپنے قارئین کے ساتھ Share کر رہا ہوں!میرے لئے وہ دن بہت یادگار تھا...
March 03, 2017
صرف ایک تھپکی

اس نے میرے دفتر میں داخل ہونے کے بعد کرسی پر بیٹھتے ہی جوتے اور جرابیں اتاریں اور صوفے پر ’’پتھلا‘‘ مار کر بیٹھ گیا۔ابھی اسے بیٹھے کچھ ہی دیر ہوئی تھی کہ اس نے ناگواری سے اپنی ناک سکوڑی اور پوچھا ’’کیا تمہارے کمرے میں کوئی چوہا مرا ہوا ہے ؟‘‘ میں نے کہا ’’اگر تمہیں بھوک لگی ہے تو کوئی حلال چیز منگوا لیتے ہیں‘‘ اس پر اس نے...
March 02, 2017
ایک بے وزن شاعر سے ملاقات

تشنہ صاحب ! آپ یہ بتائیں کہ آپ نے اپنا تخلص تشنہ کیوں رکھا ؟یہ آپ نے بڑا اچھا سوال پوچھا۔جی بات دراصل یہ ہے کہ میرے گائوں سے اسکول کافی دور تھا اور یہ سارا رستہ مجھے پیدل طے کرنا پڑتا تھا۔ اسکول پہنچتے پہنچتے پیاس سے برا حال ہو جاتا تھا اور چونکہ اسکول میں پانی کا کوئی مناسب بندوبست نہ تھا لہٰذا میں نے اپنا تخلص تشنہ رکھ لیا۔بہت...