Dr Furqan Hameed - Urdu Columns Pakistan | Jang Columns
| |
Home Page
اتوار یکم رمضان المبارک 1438ھ 28 مئی 2017ء
ڈاکٹر فر قان حمید
May 17, 2017
ایردوان کی ری پبلکن پارٹی سے متعلق اسٹرٹیجی

جدید جمہوریہ ترکی کی تاریخ پر جب ہم ایک نظر ڈالتے ہیں تو ہمیں ری پبلکن پیپلز پارٹی اور ترکی لازم و ملزوم نظر آتے ہیں۔ اس کی سب سے بڑی وجہ اس پارٹی کی جانب سےہر موقع پر اتاترک کا نام استعمال کرنا ہے۔اگرچہ اس پارٹی کو اتاترک ہی نے تشکیل دیا تھا اور ان ہی کے اصولوں پر اسے چلا نے کی کوشش کیجاتی رہی۔ ا تاترک کے بعد ری پبلکن پارٹی کی قیادت...
May 03, 2017
صدر ایردوان کا دورۂ بھارت

صدر ایردوان نے اکتیس مارچ تا یکم مئی 2017ء بھارت کا سرکاری دورہ کیا۔ یہ کسی بھی ترک صدر کا سات سال بعد دورۂ بھارت تھا اس سے قبل صدر عبداللہ گل بھارت کا دورہ کرچکے ہیں جبکہ ایردوان نے اس سے قبل وزیراعظم کی حیثیت سے بھارت کا سرکاری دورہ کیا تھا۔ یہ صدر ایردوان کا 16اپریل کے صدارتی ریفرنڈم کے بعد پہلا غیر ملکی دورہ ہے۔بھارت روانگی سے قبل...
April 26, 2017
ترکی کے صدارتی ریفرنڈم کا جائزہ

ترکی میں سولہ اپریل بروز اتوار سیاسی نظام کی تبدیلی کے بارے میں ریفرنڈم کروایا گیا۔ اس ریفرنڈم میں ساڑھے پانچ کروڑ ووٹرز اپنا حقِ رائے دہی استعمال کرنے کے اہل تھے جن میں سے چھیاسی فیصد ووٹروں نے ایک لاکھ سڑسٹھ ہزار پولنگ اسٹیشنز پر اپنا اپنا حقِ رائے دہی استعمال کیا۔ ترکی دنیا کے ان گنے چنے ممالک میں سے ایک ہے جہاں ووٹروں کی بہت بڑ...
April 19, 2017
نظام کی تبدیلی۔ ترک عوام کا فیصلہ

ترکی میں 15جولائی کی ناکام بغاوت کے بعد ملک کے سیاسی نظام کی تبدیلی کے بارے میں برسراقتدار جماعت جسٹس اینڈ ڈویلپمنٹ پارٹی (آق پارٹی) کے رہنمائوں نے عوام کو واضح پیغامات دینے شروع کردیئے تھےتاہم ملک میں نظام کی تبدیلی کے بارے میں ماضی میں ہمیشہ ہی کوشش کی گئی لیکن کوئی بھی رہنما اس سلسلے میں کوئی ٹھوس قدم اٹھانے میں کامیاب نہ...
April 12, 2017
صدارتی ریفرنڈم سے قبل نتائج

ترکی میں16اپریل کے صدارتی ریفرنڈم کو اب جبکہ صرف چار دن باقی رہ گئے ہیں مختلف سیاسی جماعتوں کی پروپیگنڈہ مہم میں بڑی تیزی آگئی ہے اور سیاسی درجہ حرارت نقطہ عروج کو چھو رہا ہے۔ ملک میں صدارتی نظام متعارف کروانے کے خواہاں ایردوان کی زندگی جہد مسلسل سے عبارت ہے۔ صدر ایردوان اس بات پر پختہ یقین رکھتے ہیں کہ ملک کا موجودہ پارلیمانی...
April 05, 2017
یورپ کا ایردوان کے خلاف اتحاد

ترکی اور یورپی یونین کے تعلقات روز بروز سرد مہری کا شکار ہوتے جا رہے ہیں حالانکہ یورپ اور ترکی کا ایک دوسرے کے بغیر تصور بھی نہیں کیاجاسکتا ۔ ترکی اگرچہ یورپی یونین کا مستقل رکن نہیں ہے لیکن یورپی یونین اسے اپنی مستقل رکنیت عطا کرنے کے لئے ہمیشہ ہی مختلف شرائط عائد کرتی رہی ہے اور ترکی کی جانب سے ان شرائط کو پورا کرنے کے باوجود...
March 29, 2017
انقرہ میں یومِ پاکستان کی گرمجوشی

23 مارچ یومِ پاکستان کے موقع پر شکر پڑیاں گراؤنڈ میں منعقد ہونے والی پریڈ میں اس بار تین ممالک کے دستوں جن میں چین، سعودی عرب اور ترکی شامل تھے نے شرکت کی۔ ترکی کے مہتر بینڈ نے اس پریڈ کے دوران پاکستانیوں کے دل جیت لئے۔ ویسے بھی ترکی ایک ایسا ملک ہے جو قلبی، ثقافتی ا ور سیاسی لحاظ سے پاکستان سے سب سے قریب ہے اس کی سب سے بڑی وجہ دونوں...
March 22, 2017
ترک اسٹائل صدارتی نظام

تین براعظموں پر پھیلی ہوئی دنیا کی عظیم اسلامی سلطنت، خلافت عثمانیہ کے خاتمے کے بعد جدید جمہوریہ ترکی کے قیام سے لے کر اب تک ترکی کے سیاسی نظام میں سب سے بڑی تبدیلی کی پارلیمنٹ کی منظوری کے بعد اب نظریں 16اپریل کو کروائے جانے والے ریفرنڈم کی جانب مرکوز ہو گئی ہیں۔ اس ریفرنڈم میں ترک با شندے ملک میں صدارتی نظام نافذ کرنے کے حق میں یا...
March 15, 2017
یورپ پر ایردوان کا خوف کیوں؟

ترکی اور یورپی یونین کے رکن ممالک کے درمیان تعلقات ہمیشہ ہی اونچ نیچ کا شکار رہے ہیں اور یورپی یونین کے بڑے ممالک جن میں جرمنی اور فرانس پیش پیش ہیں کبھی بھی دل سے ترکی کو یورپی یونین کی رکنیت عطا کرنے کے حق میں نہیں رہے بلکہ ہمیشہ ہی ترکی کو انسانی حقوق کا درس دیتے ہوئے اسے رکنیت سے دور رکھنے کی کوششوں میں مصروف رہے ہیں حالانکہ یہی...
March 08, 2017
ہیڈ اسکارف پر پابندی کا مکمل خاتمہ

جدید جمہوریہ ترکی جو کہ ایک سیکولر ملک ہے اور جس کی آبادی کا ننانوے فیصد مسلمانوں پر مشتمل ہے کے 1923ء کے پہلے آئین میں ہیڈ اسکارف پر پابندی سے متعلق کوئی شق موجود نہیں ہے لیکن اتاترک نے ملک میں پردے پر پابندی اس وقت لگائی جب غیر ملکی قوتوں نے بعض پردہ نشین خواتین کو جاسوسی کرنے اور اپنے مقاصد کیلئے استعمال کیااور مملکت کو بڑے...
March 01, 2017
پاک ترک تعلقات میں عملی پیش رفت

پاکستان اور ترکی جغرافیائی لحاظ سے دو الگ الگ ریاستیں ہیں لیکن دونوں ممالک قدیم تاریخی، مذہبی ثقافتی، تجارتی اور تہذیبی بندھن میں بندھے ہوئے ہیں۔ قیام پاکستان سے قبل ہی برصغیر کے مسلمانوں نے ترک عوام کے ساتھ یکجہتی کا مظاہرہ اس وقت کر دیا تھا جب استعماری قوتیں سلطنت عثمانیہ کو تباہ کرنے پر تلی ہوئی تھیں۔ پاکستان کو تسلیم کرنے...
February 22, 2017
ترکی میں صدارتی نظام کیوں ناگزیر ہے؟

اگر ترکی کی تاریخ پر ایک نگاہ ڈالی جائے تو ہمیں جدید جمہوریہ ترکی کے بانی غازی مصطفےٰ کمال ملک میں صدارتی نظام پر بھر پور طریقے سے عمل درآمد کرتے ہوئے دکھائی دیتے ہیں۔ اگرچہ اس دور میں ملک میں بادشاہت کے خاتمے کے بعد جمہوریت اور پارلیمانی نظام کی بنیاد رکھی گئی تھی لیکن اس دور میں ہونے والے تمام فیصلوں اور انقلابات پر عملی طور پر...
February 15, 2017
پاک ترک تعلقات میں عملی اشتراک و تعاون

ترکی زبا ن کا مشہور محاورہ ہے ’’Akan sular durur‘‘ یعنی ’’بہتے پانی کا رک جانا‘‘ جس کے معنی ہیں بغیر کسی ہچکچاہت، اعتراض اورمخمصے کے محبت کا اعتراف کرنا۔ ترک باشندے، سیاستدان اور رائٹرز عام طور پر اس محاورے کو اگر کسی ملک اور اس کے باشندوں کے لئے استعمال کرتے ہیں تو وہ ملک بلا شبہ پاکستان اور پاکستانی باشندے ہی ہیں۔ دنیا میں ترکی...
February 08, 2017
ترکی میں صدارتی نظام کی آمد آمد

وزیراعظم رجب طیب ایردوان جو ملک کی تاریخ میں مسلسل تین بار اور طویل ترین مدت تک مسندِ وزارتِ عظمیٰ پربرا جمان رہنے کا ریکارڈ قائم کرچکے ہیں اب ملک میں صدارتی نظام کو متعارف کرانےکی جانب گامزن ہیں۔ ایردوان کی قیادت میں قائم ہونے والی جسٹس اینڈ ڈویلپمنٹ پارٹی نے اپنے قیام کے ایک سال بعد ہی اقتدار حاصل کرلیا تھا جو کہ ترکی کی تاریخ...