Dr Sughra Sadaf - Urdu Columns Pakistan | Jang Columns
| |
Home Page
ہفتہ 30؍شعبان المعظم 1438ھ 27 مئی 2017ء
ڈاکٹر صغرا صدف
وجدان
May 24, 2017
نیکی اور بدی کے درمیان ہم کہاں کھڑے ہیں

نیکی اور بدی کے درمیان موجود لائن آف کنٹرول کے آس پاس کچھ علاقہ کسی بھی قوت کی تحویل میں نہیں ہوتا۔ یہاں دونوں اطراف کے اثرات موجود ہوتے ہیں۔ جو لوگ بدی والے حصے کی لائن کے قریب ہوتے ہیں ان پر بدی کے اثرات زیادہ نمایاں دکھائی دیتے ہیں اور جو نیکی کی لائن کے قریب ہوتے ہیں وہ نیک اور پارسا انسان کہلاتے ہیں یا یوں کہئے کہ وہ صحیح...
May 19, 2017
جو ڈھونڈے سو پاوے بھائی مفت نہیں پر یاری

یہ خاک کا پتلا کہلانے والا کیا ہے۔ آج تک اس کی صلاحیتوں، قابلیتوں اور فہم ادراک کا اندازہ ہی نہیں لگایا جا سکا۔ کبھی حالات کے سامنے سرنڈر اور کبھی اپنی انگلی کے اشارے سے زمین و آسمان میں موجود اشیا کا رُخ بدلتا جاتا ہے۔ آخر یہ کیسے ممکن ہے، وہ کیا قوت ہے جو خاکی بدن کو نوری توانائی میں ڈھال کر فطرت کو تسخیر کرنے کی قوت بخشتی ہے۔...
May 16, 2017
ایک نئی صبح کو سلام

آخر69سالوں بعد وہ روشن صبح طلوع ہو چکی جس کی ایک جھلک دیکھنے کے لئے لاکھوں لوگ اندھیرے کی گھمبیر دیواروں کو ٹکریں مارتے دوسرے جہان رخصت ہوئے مگر ان کی قربانیوں سے ایک اینٹ کا فاصلہ روشن دان کی شکل دھار گیا۔ ایک دنیا پر حقیقت واضح ہونے لگی۔ وطن سے محبت کرنے والوں کی ترسی ہوئی نگاہوں نے اس دن کے ساتھ جڑے پیغام سے وہ نور اخذ کیا جو اگلی...
May 11, 2017
کبھی صوفی ثقافتی ہیرو تھا

صوفی تخیل کی اُڑان بھرنے سے پہلے پائوں تلے موجود مٹی کو گلے لگا کر اس کی دھڑکن محسوس کرتا ہے، اس کی سرگوشی سنتا ہے، اس سے دوستی کر کے اس کے دکھ سکھ معلوم کرتا ہے۔ تن کی مٹی اور زمین کی مٹی میں کوئی گہرا ناتا ہے اسی لئے دونوں میں ایک خاص کشش ہے۔ جب قادرِ مطلق انسان کا بُت بنا کر اپنی روح پھونکتا ہے تو وہ بُت اسی مخصوص کی ترجمانی کرتا ہے...
May 04, 2017
کیاہم سب صرف منصف ہیں؟

معاشرہ امن اور نظم و ضبط کے سانچے میں ڈھلے ماحول کا نام ہے اسی لئے زندگی کو ضابطے کا پابند بنانے کے لئے ترقی کی جانب گامزن ہوتے ہی انسان نے قانون سازی کو بنیادی اہمیت دی کیوں کہ جب تک آپ کے پاس ایک منشور اور نقشہ نہ ہو آپ زندگی کا سفر درست سمت طے کرتے ہوئے دشواری محسوس کرتے ہیں۔ اگر چوکوں پر اشارے موجود نہ ہوں تو کسی کا بھی گاڑی...
April 27, 2017
کتابوں کے درمیان

ایک عجیب ماحول تھا۔ ایک ایسا سہانا منظر جس کی ہوبہو عکاسی ممکن ہی نہیں۔ ہر طرف دانش کی خوشبو بکھیرتا نیشنل بک فائونڈیشن کا کتاب میلہ دراصل عالمی سطح کا ایسا پروگرام ہے جس کے لئے اہل فکر و دانش اور کتاب سے محبت رکھنے والے پورا سال انتظار کرتے ہیں۔ یہ وہ واحد پلیٹ فارم ہے جہاں کتاب اپنی مقناطیسی قوت سے انسانوں کی توجہ کو کھینچتی...
April 20, 2017
آخر توہین انسانیت کیا ہے؟

کبھی کبھی اچانک رونما ہونے والی کوئی انہونی زندگی کی آنکھ میں منجمد ہو جاتی ہے تو اس مخصوص منظر میں بکھری اذیتوں کی کرچیاں چنتی سوچ احساس کو لامتناہی کرب سے دوچار کر دیتی ہے۔ انسان لاکھ کوشش کرے، ادھر ادھر کی چیزوں پر توجہ مرکوز کرے مگر نگاہ میں ٹھہری بے بسی کی تصویر ہر شے میں منعکس ہو کر ماحول کو اداسی سے بھر دیتی ہے۔ دنیا کے...
April 13, 2017
مندی ہاں کہ چنگی ہاں

لاہور شہر کو یوں تو کئی اعزازت حاصل ہیں۔ ہر دور نے کسی نہ کسی بڑائی کا تاج اس کے ماتھے پر سجایا ہے اور اگر اس کے اعزازات کو جمع کیا جائے تو لاہور کی تاریخ سے مزین کتاب دنیا کی بہترین کتابوں میں سے ایک شمار ہو۔ اس شہر کی ظاہری اور باطنی خوبصورتی ان روحانی کرنوں کی مرہونِ منت ہے جو ہر وقت اس کا حصار کئے رہتی ہیں۔ بے شمار صوفی اور درویش...
April 06, 2017
بھٹو کب تک زندہ رہے گا؟

زندگی صرف جسم میں حرکت کرتے خون اور سانس لینے کا نام تو نہیں۔ زندگی تو خواہشات، نظریات، امکانات اور تسخیرِ کائنات سے جڑا ہوا ایک سلسلہ ہے جو مسلسل جاری و ساری رہتا ہے۔ اسی طرح ہر فرد بھی گوشت پوست کا ڈھانچہ نہیں۔ کچھ لوگ انسانیت کی ایسی معراج پر فائز ہوتے ہیں جس تک موت کی رسائی ممکن ہی نہیں۔ اپریل کا مہینہ کھو دینے کے درد اور تاریخی...
March 30, 2017
بلوچستان کے طلبا اورای روزگار سینٹر

بلوچستان کے طلباسے مِلنا ہمیشہ ایک خوشگوار حیرت رہا ہے کیونکہ یہ وہ نسل ہے جو پرانی روایات کی امین بھی ہے اور جس کے خیالات میں وقت نے جدّت کے کئی سپنے بو رکھے ہیں ان سپنوں کی تعبیر کا اندازہ ان سے گفتگو کے ذریعے لگایا جاسکتا ہے۔ گزشتہ دنوں بلوچستان سے کیڈٹ کالج مستونگ کے طلبا پنجاب حکومت کی دعوت پر لاہور تشریف لائے تو وزیراعلیٰ...
March 23, 2017
آج اس مینار کے پیمان کو روشن کریں

23؍ مارچ پاکستان کی تاریخ میں ایک سنگِ میل کی حیثیت رکھتا ہے۔ اس دن منٹو پارک (موجودہ گریٹر اقبال پارک) میں برصغیر کے رہنمائوں نے عوام کے ٹھاٹھیں مارتے سمندر کے سامنے ایک نئے وطن کے خواب کو تعبیر دینے کے لئے ایک قرارداد منظور کی۔ یہ قرارداد دراصل ایک عہد نامہ تھا جس پر وہاں موجود لوگوں کے ساتھ ساتھ برصغیر میں بسنے والے آزادی کے...
March 16, 2017
چل میلے نوں چلئے

پنجاب دنیا بھر میں ایک ایسی پر بہار سرزمین ہے جس کے ظاہر کو پانچ دریائوں کی لہریں شاداب کرتی رہی ہیں تو اس کے باطن میں عالمگیر سوچ کے حامل صوفیا امن اور محبت کی فکر کاشت کر کے انسانیت سے اس کا رابطہ استوار کرتے رہے ہیں۔ یوں ظاہری اور باطنی خوبصورتی مل کر ایک ایسی ہم آہنگی پیدا کرتی تھی جس کی وجہ سے پنجاب امن، محبت اور رواداری کا...
March 09, 2017
کہیں وہ تنہا نہ رہ جائے

قارئین جس نشے کے بارے میں آج کچھ کہنا ضروری ہو گیا ہے وہ ایک مختلف قسم کانشہ ہے جس کا پینے پلانے یا کھانے سے تعلق نہیں بلکہ یہ خون میں جا کر وجود کے ذرے ذرے میں پھیلتا انسان کو اس حد تک عقل و دانش سے بے گانہ کر دیتا ہے کہ وہ ہر شے اور عمل کو اپنی مرضی، پسند، خوشی اور مفاد کے تناظر میں رکھ کر اس کی وقعت طے کرتا ہے۔ ’’جو میں سوچتا ہوں وہ...
March 02, 2017
اچھے عیسیٰ ہو مریضوں کا خیال اچھا ہے

زندگی کا تمام حسن صحت سے مشروط ہے۔ صحت ہو تو ہر شے بھلی لگتی ہے۔ انسان معاشی مسائل اور سماجی معاملات کی پروا نہیں کرتا۔ روکھی سوکھی کھا کر بھی مطمئن رہتا ہے مگر صحت نہ ہو تو محلوں کی زندگی اور تعیشات بھی ایک آنکھ نہیں بھاتیں، زندگی بوجھل ہو کر رہ جاتی ہے، انسان قدرت کی نعمتوں سے محروم کر دیا جاتا ہے تو مادی دولت اپنی اہمیت کھو دیتی...