Hassan Mujtaba - Urdu Columns Pakistan | Jang Columns
| |
Home Page
اتوار یکم رمضان المبارک 1438ھ 28 مئی 2017ء
حسن مجتبٰی
May 26, 2017
چین، پاکستان اور اس کا بایاں بازو

نیویارک کے علاقے فلشنگ جانیوالی بس کے انتظار میں لگی قطار میں میرے پیچھے کھڑے ہوئے مشرقی ایشیائی لگتے شخص سے میں نے پوچھا، ’’چین سے یا تائیوان سے ہو؟‘‘ تو اس نے کہا ’’دونوں سے نہیں انڈونیشیا سےہوں‘‘۔ ہم لوگ جو ہر مشرقی ایشیائی چاہے مشرقی ایشیائی پھر وہ چینی ہو کہ ویتنامی چاہے تھائی، جاپانی کہ کوریائی یا کمبوڈیائی، فلپینی اور...
May 18, 2017
مزدوروں کا قتل اور علیحدگی پسندوں کی دہشت گردی

شورش زدہ بلوچستان میں نام نہاد سرمچار گروہوٖں کے ہاتھوں وقت بوقت غیر بلوچ محنت کشوں چاہے آبادکاروں کے قتل کے بعد حالیہ دنوں میں گوادر میں دس کے قریب محنت کشوں، جن میں کمسن بچے بھی شامل تھے، قتل کر دئیے گئے جس کی ذمہ داری بھی علاقے میں غیر ریاستی دہشت گردی و تخریب کاری میں ملوث گروپ بلوچ لبریشن آرمی نے قبول کر لی ہے۔ مسکین ترین،...
May 12, 2017
یہ دستورِ زباں بندی

ہندی اور اردو کے جھگڑے نے ہندوستان کو تقسیم کیا اور پھر بنگالی اور اردو کے جھگڑے نے پاکستان کو دو لخت کیا تھا۔ پھر یوں ہوا کہ ہندوستان نے جمہوریت کو آمریت پر ترجیح دیتے نہ فقط ہم مانیں نہ مانیں خود کو کم از کم دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کے طور منوا لیا، بشمول ہندی اور سندھی اپنے جمہور یا عوام کی طرف سے بولی جانیوالی زبانوں یا...
May 01, 2017
شاہ رکن عالم کے گنبد پہ بیٹھے کبوتر

پروفیسر حسن نواز گردیزی بھی اس جہان رنگ بو سے گزر گئے۔ ایک جہاں گشت صوفی اور درویش کامریڈ و یگانہ روزگار اسکالر جنکا تعلق ملتان کے شاہ گردیز کے گدی نشین خانوادے سے تھا۔ ملتان کی مٹی بھی کیا عجیب مٹی ہے جس نے کیسے کیسے نہ عجب لوگ پیدا کئے ہیں۔ درویش منش صوفی، شاعر، فنکار، قلندر، کاریگر اور کارٹونسٹ۔ ثریا ملتانیکر سے لیکر مصدق سانول...
April 20, 2017
کیا سندھ اب بھی صوفی ہے؟

لاہور میں سندھی طالبہ نورین لغاری اور اسکے ساتھیوں کی، شدت پسندوں کی کمین گاہ پر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکاروں سے مڈبھیڑ کے دوران 35منٹ تک مقابلے کے بعد گرفتاری اور ایک شدت پسند کی ہلاکت جو کہ اس کا مبینہ شوہر بتایا جاتا ہے، نہ فقط اس شک کو یقین میں بدلتا ہے کہ سندھ اور اس کا سماج اب اپنے خمیر میں صوفیانہ نہیں رہا بلکہ یہ...
April 13, 2017
کمزور لوگ اور موٹی مرغیاں

ویر جی کولھی کو کون نہیں جانتا۔ پاکستان میں انسانی حقوق سمیت سول سوسائٹی کے جتنے حلقے ہیں ان میں ویر جی کولھی ایک معتبر نام ہے۔ وہ چھوٹا بچہ جو خود تھر میں اپنے ہاری کنبے سمیت زمینداروں کی زمینوں پر جبری مشقت کے کیمپ میں قید رہا جسے رہائی ہیومن رائٹس کمیشن آف پاکستان سندھ کی ٹاسک فورس کے شکیل پٹھان نے دلوائی تھی۔ یہ لڑکا نہ فقط...
April 06, 2017
سندھ پولیس میں سیاسی مداخلت۔ ایک تاریخ

برصغیر غیر منقسم ہندوستان میں انگریز حکمرانوں کے خلاف اٹھارہ سو ستاون کی جنگ آزادی کے بعد منظم کی ہوئی پولیس کے محکمے کے قائم کیے جانے کا مقصد اور پولیس رولز اصل میں مقامی ہندوستانی کی عزت نفس کو مجروح رکھ کر اس کی آزادی کی امنگ اور سرکشی کو دبا کر رکھنا تھا اور آج تک وہی قوانین و پولیس اسٹرکچر کام کر رہا ہے۔ سندھ میں پولیس کے...
March 30, 2017
بینظیر ،بینظیر مت کھیلو

آج سے نو برس قبل تک جب کسی بھی اخبار کا پہلا صفحہ کھولتے، ٹی وی کا چینل آن کرتے تو تمام نفاستوں سے بھرپور، سیاسی دانش و حاضر جوابی میں لاجواب بینظیر بھٹو بولتی دیکھی اور سنی جاتی۔ اسے کوئی ضرورت نہیں ہوتی ’’دیکھتی آنکھوں اور سنتے کانوں کو سلام پہنچے‘‘ کہنے کی کہ ابھی اس کےدنوں میں اسکی سیاست و پارٹی نیلام گھر نہیں بنے تھے اور...
March 23, 2017
ایاز جمالی بھی پاکستان کا شہری ہے

سندھ سے تعلق رکھنے والا پاکستانی سندھی نژاد انجینئر ایاز جمالی پچھلے ہفتے جنوبی سوڈان میں وہاں کی حکومت کے خلاف برسر پیکار باغی گروپوں میں سے ایک گروہ کے ہاتھوں اغوا ہو گیا ہے۔ ایاز جمالی کے گھر میں ماتم بپا ہے۔ اس کے یار دوست اس کی رہائی کے لئے سوشل میڈیا اور دیگر پاکستانی میڈیا میں پریشاں ہیں۔ اپیلیں عرضیاں اور فریادیں ڈالے جا...
March 16, 2017
رضیہ بھٹی:صحافت کا سنہری دور

آج پاکستان کی اس صحافی کی برسی کا دن ہے جس نے کہا تھا ’’صحافت کبھی آزاد نہیں ہوتی صحافی آزاد ہوتا ہے۔‘‘ جس نے ایک دفعہ اپنے اداریے میں لکھا تھا ’’پاکستان میں صرف ایک بات یقینی ہے کہ یہاں کچھ بھی یقینی نہیں۔‘‘ جی ہاں یہ انگریزی ماہنامے ’’نیوزلائن‘‘ کی بانی اور مدیر رضیہ بھٹی پاکستان میں تحقیقی صحافت کے گنے چنے بانیوں میں...
March 09, 2017
آخری جج

چیف جسٹس سجاد علی شاہ بھی آخرکار اس جہان رنگ و بو اور بے قدر نگر سے کوچ کر گئے۔ کراچی میں لیاری کے تاریخی کھڈہ کے علاقے میں جنم لینے والے سید سجاد علی شاہ سندھ چیفس کورٹ کے رجسٹرار روشن علی شاہ کے فرزند تھے۔ روشن علی شاہ کو انیس سو پچاس کے عشرے میں مولوی تمیزالدین کیس کے حوالے سے شہرت ملی تھی جب انہوں نے مولوی تمیز الدین کا کیس داخل...
March 02, 2017
جام مروت کادور پر آشوب

رات جب کسی خورشید کو شہید کرےانیس سو نوے کی دہائی میں سندھ پر جام صادق علی کی حکومت تھی جو خود کو اسلام آباد میں صدر غلام اسحاق خان کا ایس ایچ او کہلاتا تھا۔ پی پی پی ہی کے بطن سے سیاسی طور پیدا ہونیوالا جام صادق علی سندھ میں بے نظیر بھٹو، اس کے شوہر اور خاص طور پر پی پی پی کے جیالے کارکنوں اور لیڈروں کے لئے بہت سے کیسوں میں ضیاءالحق...
February 23, 2017
طلوع سحر ہے شام قلندر

میں اس کے خیال کی انگلی پکڑ کر دور جا نکلا کہیں سیہون کی گلیوں میں ’’قلندر پت رکھجاں‘‘ (قلندر لاج رکھنا) یہ ذوالفقار علی بھٹو کے آخری الفاظ تھے جو انہوں نے سپریم کورٹ کے سامنے اپنی دفاعی تقریر کے دوران کہے۔ آریا مہر شہنشاہ محمد رضا شاہ پہلوی نے قلندر شہباز کے مزار کیلئے سونہری دروازہ تحفے میں دیا، اور مغل فرمانروا شاہجہاں نے...
February 16, 2017
ایک بے بدل تاریخ دان کی موت

ان کی شناخت محض یہ نہیں کہ وہ سندھ و ملک کے انتہائی متنازع لیکن دبنگ سیاستدان کی اکلوتی بیٹی تھیں۔ اگرچہ وہ خود سندھ کی سیاست میں متنازع رہیں لیکن وہ ایک اعلیٰ پائے کی جدید تاریخ دان، استاد اور عالم و اکابرہ تھیں۔ وہ سندھ کے نام نہاد ’’مرد آہن‘‘ کہلانے والے سابق حکمران و سیاست دان محمد ایوب کھوڑو کی قابل فخر بیٹی ڈاکٹر حمیدہ...