| |
Home Page
بدھ 28 رجب المرجب 1438ھ 26 اپریل 2017ء
ادریس بختیار
April 21, 2017
بے لگام انتہاپسندی

مردان کے المناک واقعہ کی وجوہات اب سامنے آنے لگی ہیں۔ یہ توہینِ رسالت کا معاملہ نہیں ہے۔ ایک سازش ہوئی جس کے نتیجے میں ایک نوجوان اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھا۔ اس سازش میں عبدالولی خان یو نی ورسٹی کی انتظامیہ مبینہ طور پر ملوث ہے۔ ایک ملزم، وجاہت، نے پولیس کے سامنے کچھ حقائق بیان کر دئیے ہیں، مزید باتیں تحقیقات میں واضح ہو جائیں گی۔...
April 14, 2017
تضادات اور مسخ شدہ تاریخ

ملک میں تضادات بڑھتے جارہے ہیں۔ وہ جو درسی کتابوں میں ترامیم کے لیے شور مچاتے رہتے ہیں، جن کا دعویٰ ہوتا ہے کہ تعلیمی اداروں میں پڑھائی جانے والی کتابوں میں، بقول ان کے، باہر سے آنے والے حملہ آوروں کو ہیرو بنا کر پیش کیا جاتا ہے، وہ خود تاریخ مسخ کررہے ہیں۔خود ہماری پارلیمان کے بعض ارکان یہ بھی نہیں جانتے کہ 23مارچ کو کیا ہوا تھا...
April 07, 2017
وزیراعظم کے نام ایک خط!

محترم وزیرِاعظم صاحب، حیدرآباد کا دورہ کرنے پر آپ مبارکباد کے مستحق ہیں۔ یوں تو سندھ کے اکثر شہر وں کو آپ کی توجہ کی ضرورت ہے، جنہیں، اگر اسے مبالغہ نہ سمجھا جائے تو، پچھلے 70برس سے حکمران نظر انداز کر رہے ہیں۔ لاڑکانہ ایک ایسا شہر ہے جس نے کئی وزیرِاعظم اور کئی وزیرِاعلیٰ اس ملک اور صوبے کو دئیے۔ قومی اور صوبائی اسمبلیوں کے...
March 31, 2017
مردم شماری ؟

بالآخر ملک میں مردم شماری کا کام شروع ہوا۔ یہ الگ بات ہے کہ دوسرے بہت سے کاموں کی طرح یہ بھی ملک کی اعلیٰ ترین عدالت کی ہدایت پر ہو رہا ہے، ورنہ حکمرانوں کا تو کوئی ارادہ نہیں تھا کہ یہ اہم کام کیا جائے، کہ جس کی بنیاد پر تمام تر منصوبہ بندی کی جاتی ہے۔ ان سب کے اپنے مفادات ہیں، مردم شماری اُس میں ایک بڑی رکاوٹ رہی ہے۔ حالیہ مردم...
April 08, 2016
یہ کیسے لوگ ہیں؟

یہ کیسے لوگ ہیں، غیرت اور شرم انہیں چھو کر بھی نہیں گئی۔ بد عنوانی اور مال کمانے کی ہوس ان کی ختم ہی نہیں ہوتی۔ اربوں کھربوں یہ ڈکار لئے بغیر ہضم کرجاتے ہیں۔ کوئی شعبہ انہوں نے چھوڑا نہیں۔ حد تو یہ ہے کہ تعلیم بھی ان کی د ستبرد سے محفوظ نہیں رہی۔ ایک رپورٹ کے مطابق، ایک کھرب روپے سے زیادہ رقم صرف پنجاب اور سندھ میں تعلیم کے شعبہ میں...
April 04, 2016
چرانا دھنیے کا اور توڑنا آئین کا

اتنا امتیاز !! ماتم کی جائے ہے۔ نہیں ــ، یہ ظلم ہے، امتیاز نہیں۔ ایک شخص کے خلاف متعدد مقدمات زیر ِسماعت ہیں، غداری، یا آئین کی خلاف ورزی ،ان میں سے ایک ہے۔ بے نظیر بھٹو کا قتل دوسرا، اور غازی عبدالرشید کا قتل تیسرا۔ اور بھی کئی ہیں۔ ایک مقدمہ میں تو مارچ کی اکتیس تاریخ کو اسے عدالت میں پیش ہونا تھا۔ مگر وہ حاضر نہیں ہوا۔ ہو بھی...
March 30, 2016
ملک لہو لہان۔اور دعوے

لاہور لہو لہو ہے، اور پورا ملک، اور دعوے ہیں، اور دعوے ہیں۔ نتائج؟ معصوم، بے گناہ بچوں کی لاشیں اور آہ و بکا کرتی مائیں۔ ہر کچھ دن بعد۔ انتہا پسندجہاں چاہتے ہیں، جب چاہتے ہیں حملہ آور ہو جاتے ہیں۔ قوم اپنے پیاروں کی لاشیں اٹھاتی ہے، سوگ مناتی ہے اور دعوے سنتی ہے، توقع باندھتی ہے کہ دہشت گردوں کا خاتمہ کردیا جائے گا۔ کچھ...
March 16, 2016
الزام تراشی اور خود احتسابی

کیا صرف الزام تراشی کافی ہے؟ مگر یہ تو بہت پرانا وتیرہ ہے صاحبانِ اقتدار کا۔ یا ان کے آلہ ہائے کار کا۔ بہت دور ماضی میں نہ جائیں تو بھی۔ اور اگر پرانے زمانے کا تذکرہ چھیڑیں تو وہ کیا تھا تحفظِ پاکستان آرڈیننس۔ اُس کے تحت بھی بہت سے نامور لوگ گرفتار کئے گئے، ان پر ملک سے غداری کے الزامات عائد کئے گئے۔ ایک مارشل لا میں مولانا مودودی...
March 09, 2016
قصۂ درد

ضمیر نیازی صاحب ان دنوں بہت یاد آرہے ہیں۔ کیا منفرد آدمی تھے۔ انہوں نے اپنی زندگی میں جو کام کردیا وہ ان سے پہلے کسی نے کیا، نہ ان کے بعد کوئی کرپایا۔ پاکستان کی تاریخ میں پریس پر پڑی بپتا انہوں نے بہت حد تک جمع کردی۔ ان سے پہلی ملاقات ان کی کتابPress in Chainsکی اشاعت کے بعد ہوئی۔ اور پھر اکثر ان کے نیاز حاصل ہوتے رہے۔ ان کے گھر جانا ہو...
March 02, 2016
تشدّد، تشدّد کو جنم دیتا ہے

جب بھی کوئی ـ’’پولیس مقابلہ‘‘ ہوتا ہے، ماضی کی بہت سی باتیں یادآجاتی ہیں، کچھ درد سِوا ہو جاتے ہیں، کچھ تازہ زخم ابھر آتے ہیں۔ پہلے بھی کبھی یوں ہی ہوتا ہوگا، مگر نوّ ے کے عشرے کے آخرمیں لا قانونیت عروج پر تھی۔ ملک ، خصوصاً کراچی میں،وزیرِداخلہ، نصیراللہ بابر کا راج تھا۔ اب تو ان کا معاملہ اللہ کے سپرد ہو چکا، اُس وقت واسطہ ہم...
March 05, 2015
ڈاکٹر اشتیاق

ہر بدھ کو سنائی دی جانے والی آواز۔ وہ اب کبھی سنائی نہیں دے گی۔ اشتیاق علی خان، جنہیں ان کے دوست احباب، ان کے مطالعہ، اور اپنی محبت کی وجہ سے، ڈاکٹر اشتیاق کہتے تھے، اب ہم میں نہیں رہے۔ تقریباً ہربدھ کو ان سے فون پر بات ہوتی، کالم مل گیا کبھی میں پوچھتا، کبھی وہ خود بتاتے، مل گیا ہے، ٹھیک ہے۔ کبھی ان کی شفقت بھری آواز سنائی دیتی،...
February 05, 2015
افسوس صد افسوس

شکارپور کا سانحہ اندوہناک ہی نہیں، ناکام سیکورٹی کی بدترین،اور خراب حکمرانی کی اس سے بھی بدترمثال ہے۔ حکمران انتہا درجے کے بے حس ہیں، ادارے شرم ناک حد تک لاپرواء۔ متاثرین شدید بیچارگی کا شکار، عرش ہلادینے والی بیچارگی۔ اور یہ سانحہ اُس وقت پیش آیا ہے جب حکمران سانحہ پشاور کے بعد ایک ایکشن پلان بناچکے تھے۔ اُس پلان پر عمل کب...
January 15, 2015
حفاظتی اقدامات ؟

ایکشن پلان کے ساتھ اور بھی بہت سے کام کرنے کی اشد ضرورت ہے۔ایک اہم ترین کام، قوم کو خوف سے نکالنا ہے، خصوصاً بچوں کو۔ تین سال کی یُمنیٰ کا جملہ دل پر لگا۔ ’’میں اسکول نہیں جائوں گی، وہاں بچوں کو مار دیتے ہیں‘‘۔ پہلے تو لگا اس نے مارتے ہیں، پٹائی وغیرہ قسم کی کوئی چیز کہی ہے، جو اسکولوں میں عام ہے۔ مگر اس معصوم ، مگر سمجھدار بچی نے...
January 09, 2015
برا کیا

ایسا نہیں ہے۔ آج کا دن مبارک نہیں ہے، کسی بھی طرح، وزیراعظم صاحب۔ یہ ایک سیاہ دن ہے، آنے والا وقت بتائے گا۔ آج پارلیمان نے اپنے اختیارات سے تجاوز کیاہے، یا اپنے اختیارات سے ہاتھ دھو لئے ہیں۔ جو کچھ ہوا اچھا نہیں ہوا۔ ریاست کی اہم ترین دستاویز، آئین، میں اس طرح ترامیم نہیں کی جاتیں۔ ان پر بحث کی جاتی ہے، ان کے تمام پہلوئوں کا...