| |
Home Page
جمعہ 29؍شعبان المعظم 1438ھ 26 مئی 2017ء
کشور ناہید
May 26, 2017
قربِ قیامت کی نشانیاں

اماں جب ہم کو قربِ قیامت کی نشانیاں بتاتی تھیں تو اس میں سورج کے سوا نیزے پر آنے سے پہلے ساری دنیا میں مسلمانوں کی حکومت ہوگی۔ بچپنے سے لے کر اس ادھیڑ عمری تک زندگی گزارتے ہوئے یہی سوچتی رہی کہ ابھی تو دنیا میں پچاس کے قریب مسلمان ممالک ہیں، قیامت ہمارے سامنے تو آنے سے رہی۔ ویسے بھی مکہ مدینہ پر کسی غیر کی حکومت تو کبھی ہو ہی نہیں...
May 19, 2017
ڈیورنڈ لائن معاہدہ1993 ءمیں ختم پھر اس کے بعد

ہماری لاعلمی یا جہالت یا غفلت ہمیں بڑے مسائل میں پھنسادیتی ہے۔ آپ کو شاید یاد بھی نہ ہو کہ انگریزوں نے پاکستان اور افغانستان کی زمینی حدود مقرر کرنے کے لئے 1893میں ڈیورنڈ لائن بنائی۔ یہ لائن بلوچستان تک پھیلی ہوئی تھی۔ معاہدہ یہ ہوا کہ ڈیورنڈ لائن سو برس تک قائم رہے گی۔ یہ100برس1993میں پورے ہوگئے۔ یہ وہ زمانہ ہے جب پاکستان اور...
May 12, 2017
قلعہ فراموشی سے باہر آئی ہوئی عورت

میں اس قائداعظم کی پروردہ نسل میں سے ہوں جنہوں نے کہا تھا کہ جب تک عورت مرد شانہ بشانہ نہیں چلیں گے پاکستانی معاشرہ ترقی نہیں کرسکتا ہے وہ بلوچستان گئے، کے پی گئے اور تمام خانوں اور سرداروں کو تلقین کی کہ خواتین کو باہر نکالو اور ان کی ذہانت کو کام میں لائو۔ قائداعظم کے بعد ان کے پیغام کو لے کر محترمہ فاطمہ جناح آگے بڑھیں۔ ایک آمر...
May 05, 2017
دادی کو دال پکانا کون سکھائے گا

یہ فقرہ تھا جو کانفرنس کے دوران پشاور میں ہمارے کے پی کے دوست نے سناتے ہوئے اپنی تقریر کا آغاز کیا۔ بہت دلچسپ ماحول تھا کہ فاٹا کے، کے پی کے اور پاکستان کے تمام علاقوں کے ادیب اس موضوع پر تبادلہ خیالات کررہے تھے کہ ساری دنیا اور خاص کر ہمارے ملک میں باہمی اعتماد، یگانگت اور امن کیسے قائم ہوگا۔ مقررین نے چاہے پشتو میں تبادلہ خیالات...
April 28, 2017
خلیل جبران، گاڈ فادر اور بروٹس

حامد میر نے عدالت میں خلیل جبران کا حوالہ دیئے جانے پر کالم لکھا تھا۔ آج میرے سامنے جسٹس کھوسہ کا فلم گاڈ فادر کا حوالہ ہے، جس میں سبق یہ ہے کہ منظم طریقے پرجو جرم کیا گیا ہو وہ اپنے نقوش نہیں چھوڑتا۔ پاکستان ایسی مثالوں سے بھرا ہوا ہے۔ پاکستان کے اوّلین دنوں میں قائداعظم تھے کہ جنہوں نے کہا تھا کہ ’’اگر مسلمانوں کو ایک منظم قوم...
April 21, 2017
ناقابلِ یقین

اب جبکہ ملالہ کو اقوام متحدہ بلاکر، امن کے سفیر کا اعزاز دیا گیا ہے۔ عجیب سا لگ رہا ہے کہ حکومت پاکستان کی طرف سے مبارکباد تو کجا تحسین میں دو فقرے بھی نہیں کہے گئے۔ پاکستان میں حکومت اور پارٹیاں، دراصل اپنی لغت تبدیل کرنے میں لگے ہوئے ہیں۔میرا عاجزانہ مشورہ یہ ہے کہ محض لفظوں کی تبدیلی سے صرف اخباروں کے صفحے بھریں گے اور شام کو سات...
April 14, 2017
ایسی چنگاری بھی یارب اپنی خاکستر میں تھی

میں بڑی خوش دلی کے ساتھ سندھ کے شہر، ٹنڈو محمد خان میں ہندو محلے میں گئی، جہاں مجھے بتایا گیا تھا کہ آپ ماریہ پرتاپ سے ضرور ملیں، ہنستی ہوئی ایک عورت گھا گھرے، چولی اور دوپٹے کے ساتھ گھر سے نکلی، اس نے جو اپنی کہانی سنائی، میں نے کہا تم خود لکھوا کر بھیجو، شرماتے ہوئے بولی ’’پڑھی تو پانچویں تک ہوں، مگر اب لکھنا پڑھنا بھول گئی...
April 07, 2017
کھلے آسمان تلے سونے والوں کی مردم شماری

مردم شماری کرنے والوں نے عبداللہ غازی کے مزار کے گرد فٹ پاتھ پر سوئے لوگوں کو پہلے تو حیرانی سے دیکھا، پھر ان کا شمار کرنا شروع کیا۔مجھے یاد آیا، آج سے کوئی چالیس برس پہلے کی بات ہے، خدیجہ مستور، ہاجرہ مسرور کو صبح سویرے اسٹیشن پر چھوڑ کر آئیں تو مجھے حیرانی سے فون کرتے ہوئے کہنے لگیں ’’آج میں بہت دکھی ہوں، میں نے لوگوں کو فٹ...
March 31, 2017
ہمیں ایک ایسی ناراض نسل چاہئے

کولمبیا میں مقام بوگیٹو ایئر پورٹ۔ شلوار، قمیص میں مجھے دیکھا اور ایک شاعر جسے میں جانتی نہیں تھی مگر اس نے مڑکر بغیر تعارف کے، مجھے کہا ’’السلام علیکم‘‘ میں نے حیرت اور خوشی کے ملے جلے جذبات کے ساتھ سلام کا جواب دیا اور کہا میں کشور ناہید، پاکستان سے، اس نے انگریزی میں جواب دیتے ہوئے خوشی سے ہاتھ ملایا، عراق سے۔ سعدی یوسف۔ یہ وہ...
March 24, 2017
اسلام آباد کے کسی سیکٹر میں لائبریری نہیں !

جنگ والوں نے یوں تو میرے ساتھ ناشتے کا اہتمام کیا تھا، مگر وہاں گفتگو بڑی گمبھیر ہوگئی، دن تھا وہ جب میرے ڈیڑھ سو بچے، پشاور میں ظالمانہ طور پر مار دیئے گئے، یہ وہ دن بھی تھا جب مشرقی پاکستان کی علیحدگی کا اعلان خبروں میں سب سےآخر میں کیا گیا، ہم سب نے ان دونوں صدموں کو دیگر تفصیلات کے ساتھ تجزیاتی طور پر پیش کیا۔بنگلہ دیش اور...
March 17, 2017
مغرب اور پاکستان کے کام کرنے والوں کا تجزیہ

فیشن ہر زمانے میں زیر بحث رہا ہے، نوجوان نسل دیر نہیں کرتی نئے ڈیزائن اختیار کرنے اور موسم کی نرمی گرمی کو ذہن میں رکھے بغیر، آسکر ایوارڈ کی تصویروں کو لیکر خاص طور پر ہمارے ملک کی بچیاں فوراً درزی کے پاس پہنچ جاتی ہیں، مجھے یا کسی اور کو بھی میری عمر کے شخص کو حق نہیں پہنچتا کہ معترض ہوں، ہم نے بھی جوانی میں ہر طرح کے فیشن کئے ہیں،...
March 10, 2017
ہم بھی وہیں موجود تھے

یہ عنوان دراصل ہے اختر وقار عظیم کی کتاب کا، مگر میں اس کو استعمال کررہی ہوں، ریختہ کانفرنس دہلی کا ہولناک انجام تو آپ سب نے اخباروں میں پڑھ لیا ہوگا، ہولناک میں نے کیوں کہا، اس لئے کہ کانفرنس تو اردو کے نام پر تھی، مجھے جب بار ہا کہا گیا کہ آپ ضرور آئیں تو میں نے کہا ٹکٹ بھیجو اور بتائو کہاں ٹھہروں گی، یہ بھی کہا پروگرام بتائیں،...
March 03, 2017
کراچی کا ادبی منظرنامہ اور نوجوان

بہت بڑے عظیم ادبی میلے میں موجود ہزاروں نوجوان، لڑکیوں اور کئی برقع میں ملبوس لڑکیوں کو دیکھ کر بہت خوش اوربہت پریشان بھی آئی ہوں۔ اچھا لگا کہ جب لوگ کتابیں خرید کر لاتے تھے تو آٹو گراف لیتے تھے۔ سوال پوچھتے تھے، باتیں کرتے تھے، ہر سیشن میں اتنی خلقت ہوتی تھی کہ بچے تو زمین پر بیٹھ جاتے تھے۔ بیسیوں لوگ دیواروں کے ساتھ لگ کر کھڑے...
February 24, 2017
خواب میں آئے ہوئے سوالات

میں تو خبر پڑھ کر حیران ہونے کے علاوہ شرمسار بھی ہوئی کہ ٹیکساس میں مسجد جل جانے کے بعد، یہودی آبادی نے اپنی عبادت گاہ، مسلمانوں کو نماز پڑھنے کے لئے دیدی۔ ظاہر ہے یہ کوئی چال تو نہیں، انسانی ہمدردی کی ایک مثال ہے۔ جبکہ اس کے متضاد، کیوبک مسجد کے شہداء کی نماز ادا کی جارہی تھی جبکہ منٹریال کی مسجد پر شدت پسندوں نے حملہ کردیا۔...