| |
Home Page
جمعرات 04 شوال المکرم 1438ھ 29 جون 2017ء
مبشر علی زیدی
سو لفظوں کی کہانی
June 29, 2017
ٹونٹی……

میرے دوست ڈوڈو کے ہاتھ میں سونے کا لوٹا تھا۔’’واہ، بہت خوب صورت۔‘‘میں نے تعریف کی۔’’ہاں، ہے تو سہی۔‘‘ڈوڈو مسکرایا اور لوٹا سنبھال کر چل پڑا۔’’کہاں جا رہے ہو؟‘‘میں نے پوچھا۔’’غسل خانے، اور کہاں!‘‘ڈوڈو نے بتایا۔’’غضب خدا کا!‘‘میں چلا اٹھا،’’بائولے انسان! غسل خانے کیوں لے جا رہے ہو؟ڈرائنگ روم میں سجا کر رکھو۔یہ منفرد...
June 26, 2017
سیل ……

’’رمضان بھر ہم فارغ بیٹھے رہے۔لیکن آخری ہفتے میں سارا مال بک گیا۔‘‘ڈوڈو نے کہا۔’’کاہے کی دکان ہے تمھاری؟‘‘میں نے پوچھا۔’’کراچی میں کپڑوں کی۔‘‘ڈوڈو نے بتایا۔’’شروع میں ہماری بِکری بھی نہیں ہوئی۔لیکن آخری ہفتے میں ساری کسر نکل گئی۔‘‘فیکے نے کہا۔’’کاہے کی دکان ہے تمھاری؟‘‘میں نے پوچھا۔’’لاہور میں جوتوں...
June 25, 2017
جانور …

’’میکاؤ کا جوڑا دیکھ رہے ہو۔انگریزی بولتا ہے۔میں نے ڈیڑھ لاکھ میں خریدا تھا۔‘‘حضرت نے فرمایا۔میں بہت متاثر ہوا۔وہ مجھے ذاتی چڑیا گھر دکھا رہے تھے۔’’چھوٹے قد کے گھوڑے دیکھے؟میرے پاس چھ ہیں۔ہر ایک کی قیمت دو لاکھ سے زیادہ ہے۔‘‘حضرت نے ایک کی پیٹھ سہلائی۔میں نے سر ہلایا۔’’وہ بارہ سنگھا دیکھا؟میں نے پانچ لاکھ میں خریدا...
June 24, 2017
الابلا ………

کل رات سی ویو پر میری ملاقات ایک جل پری سے ہوئی۔’’خیریت تو ہے؟سمندر سے باہر کیوں نکل آئیں؟‘‘میں نے دریافت کیا۔’’ہماری دنیا، ہمارا سمندر مر رہا ہے۔تم انسانوں نے اسے اپنا کوڑا دان بنا دیا ہے۔ہم الابلا کھا کر مر رہے ہیں۔‘‘جل پری شکایت کرتے کرتے روہانسی ہو گئی۔’’تم بھوکی لگ رہی ہو۔آؤ میں تمہیں سحری کرواؤں۔‘‘میں یہ کہہ کر...
June 23, 2017
بندر بانٹ……

دو بلیوں میں ایک روٹی پر جھگڑا ہو گیا۔ایک کینگرو یہ خیاؤں خیاؤں دیکھ رہا تھا۔اس کے پاس ترازو تھا۔بلیوں نے سوچا، کینگرو سے فیصلہ کرواتے ہیں۔کینگرو مدد کرنے کو راضی ہو گیا۔اس نے روٹی کے دو حصے کئے،ایک ٹکڑا ترازو کے ایک پلڑے میں رکھا،دوسرا ٹکڑا دوسرے پلڑے میں۔ایک پلڑا ذرا سا جھک گیا۔کینگرو نے اس طرف کی تھوڑی سی روٹی کھا لی۔اب...
June 22, 2017
مصلحت ……

’جو ہوتا ہے، اچھے کے لئے ہوتا ہے۔‘یہ اس اے ٹی ایم پر لکھا تھا،جو کل میرا ڈیبٹ کارڈ نگل گئی۔مجھے پیسوں کی ضرورت تھی،لیکن کارڈ نہیں مل سکتا تھا۔بینک بند ہو چکا تھا۔میں بکتا جھکتا گاڑی میں جا بیٹھا۔لیاقت آباد میں ٹریفک جام تھا۔اچانک ایک ڈاکو نے پستول سے شیشہ بجایا،’’بٹوہ نکالو!‘‘ غراہٹ سنائی دی۔میں نے بٹوہ دے دیا۔وہ چھلاوے کی...
June 21, 2017
جڑواں…

’’میں ملک کا بڑا رپورٹر بننا چاہتا ہوں۔میں چاہتا ہوں کہ روز میرا نام اخبار میں چھپے،روز میری خبر کے تذکرے ہوں۔‘‘میں نے خواہش ظاہر کی۔ڈوڈو نے میری ملاقات دو ہم شکل افراد سے کرائی۔’’ان سے دوستی کر لو۔یہ تمہیں روزانہ کہانیاں سنائیں گے۔لیکن خیال رکھنا۔ایک کی خبریں جھوٹی ہوں گی،دوسرے کی سچی۔درست چناؤ سے تم بڑے رپورٹر بن جاؤ...
June 20, 2017
خریدار ………

اس لڑکی کو ڈمی پر لگا ہوا سوٹ پسند آیا۔میں نے فریش پیس نکال کر اسے دکھایا۔’’کتنے کا ہے؟‘‘اس نے دریافت کیا۔’’تین ہزار روپے کا۔ایک مشہور برانڈ کی فرسٹ کاپی ہے۔‘‘میں نے بتایا۔اس کی آنکھوں سے بے زاری جھلکنے لگی۔وہ سوٹ چھوڑ کے چلی گئی۔کچھ دیر بعد ایک اور لڑکی کو وہ سوٹ پسند آیا۔میں نے فریش پیس نکال کر اسے دکھایا۔’’کتنے کا...
June 19, 2017
عید ………

رمضان کی با ئیسویں کو بازار میں اتنا رش!میں حیران پریشان رہ گیا۔بازار میں سیکڑوں خواتین تھیں۔خوش نہیں، بے حد خوش۔کبھی ایک دکان پر جاتیں،ملبوسات کی قیمت پوچھتیں۔کبھی دوسری دکان پر جاتیں،ناپ کا جوتا نکلواتیں۔کبھی چوڑی کی دکنیا کا معائنہ کرتیں،کبھی آرٹیفشل جیولری کے ڈیزائن دیکھتیں۔ان کے ساتھ مرد بھی تھےلیکن کم اور خیالات میں...
June 18, 2017
فیصلہ ………

’’ایک بار عمران خان نے کہا تھا،کشمیر کا فیصلہ کرکٹ کے میدان میں کر لینا چاہئے۔کیوں نہ آج یہ فیصلہ کر لیں؟‘‘کوہلی کے لہجے میں غرور تھا۔سرفراز نے چیلنج قبول کر لیا۔کوہلی اننگز اوپن کرنے آ گیا۔عامر نے پہلا باؤنسر کیا،گیند کوہلی کے ہیلمٹ پر لگی۔عامر نے دوسرا باؤنسر کیا،گیند کوہلی کی کمر پر لگی۔عامر نے تیسرا باؤنسر کیا،کوہلی...
June 17, 2017
حال ………

’’اور کیا حال ہے؟‘‘میں نے پوچھا۔’’کچھ نہ پوچھو۔‘‘ڈوڈو نے کراہتے ہوئے کہا،’’بھوک نہیں لگتی۔پھر بھی توند نکل رہی ہے۔کاروبار ٹھیک نہیں چل رہا۔منافع میں نقصان ہو رہا ہے۔پچیس لاکھ کی گاڑی خریدیلیکن پہلے دن پنکچر ہو گئی۔پتا نہیں کس فقیر کی بد دعا لگی ہے۔‘‘میں نے ہم دردی کا اظہار کیا،’’فکر نہ کرو،جلد سب ٹھیک ہو جائے گا۔‘‘اسی...
June 16, 2017
روم میٹ ………

میں اس کمرے میں پہلے سے رہتی تھی۔وہ لڑکی بعد میں آئی۔ہم کئی ہفتوں تک روم میٹ رہے۔وہ یونیورسٹی کے ہاسٹل کا ایک کمرا تھا۔بہت پرانی یونیورسٹی کے کافی پرانے ہاسٹل کا خاصا پرانا کمرہ۔ہم سے پہلے نہ جانے کون کون وہاں رہا ہوگا۔میری روم میٹ کی رنگت گہری تھی۔ماتھے پر چوٹ کا نشان تھا،آنکھیں لال اور موٹی موٹی،پکوڑا سی ناک اور بھدا...
June 15, 2017
تعارف ………

اس فلم میں چھ ہیروز تھے اور میں اکیلا ولن۔انٹرویل سے پہلے وہ خوب بڑھکیں مارتے رہے،ناچتے رہے، گاتے رہے۔انٹرویل کے بعد ان سے میرا پہلی بار آمنا سامنا ہوا۔’’مائی نیم از بونڈ، جیمز بونڈ۔‘‘ان میں سے ایک نے بھرائی ہوئی آواز میں بتایا۔’’مائی نیم از ہومز، شرلاک ہومز۔‘‘دوسرا بڑبڑایا۔’’مین! مائی نیم از بیٹ مین۔‘‘تیسرا...
June 14, 2017
طریقہ …

سیمی فائنل میں ایک بیٹسمین کسی کے قابو میں نہیں آیا۔اس نے انگلینڈ کے بولرز کی خوب دھنائی کی۔کرارے چوکے لگائے، اونچے چھکے مارے۔سنچری مکمل ہونے کے بعد انگلینڈ کے کپتان کو کچھ شک ہوا۔’’اس کا ہیلمٹ اتروائیں۔‘‘مورگن نے امپائر سے تقاضا کیا۔بیٹسمین نے بہت بہانے بنائےلیکن مورگن نے ہیلمٹ اتروا کے دم لیا۔اندر سے ورات کوہلی نکل...