Raza Ali Abidi - Urdu Columns Pakistan | Jang Columns
| |
Home Page
جمعرات 04 شوال المکرم 1438ھ 29 جون 2017ء
رضا علی عابدی
دوسرا رخ
June 23, 2017
اوول کے میدان میں کیسا جادو چل گیا

ٹھیک ہے۔ چائے طشتری میں ملی کیونکہ کپ بابا جان لے گئے۔ بھارت کے حصّے میں ٹشو کے ڈبے آئے اور پاکستان میں کامیاب کھلاڑیوں کو لاکھوں نہیں، کروڑوں روپے مل گئے، وہی روپے جو میرے ٹیکس سے کاٹے گئے تھے۔ وہی ٹیکس جو میں یہ آس باندھے دئیے جارہا ہوں کہ ناداروں اور لاچاروں پر خرچ ہو گا۔ جشن اور خوشی منانے کا یہ ڈھنگ نرالا دیکھا۔ غنیمت ہے کہ...
June 16, 2017
یہ کمسن محنت کش، یہ ننھے مزدور

پچھلے دنوںبچّوں کی مشقّت کا عالمی دن منایا گیا۔ یہ دن جب بھی آتا ہے، مجھے کانپور کا قائم رضا شدّت سے یاد آتا ہے۔ اس کا قصہ ذرا دیر بعد۔ پہلے یہ کہہ کر اپنے کرب میں آپ کو شریک کرنا چاہتاہوں کہ ان بچّوں کی حالت دیکھی نہیں جاتی جو کبھی اینٹیں ڈھو رہے ہوتے ہیں اورکبھی اپنے چھوٹے چھوٹے ہاتھوں سے بڑی بڑی مشینوں کی صفائی کررہے ہوتے...
June 09, 2017
اردو کے دیے کی دھیمی پڑتی ہوئی لو

اردو کے بارے میں پہلے ہی عرض کردوں۔ یہ کسی زبان کا نام نہیں، یہ ایک تہذیب کا نام ہے۔ لوگ اسے قومی زبان کہتے ہیں، میں سوچتا ہوں میں اسے قومی تمدن کیوں نہ کہوں،اسے قومی شائستگی کا نام کیوں نہ دوں۔یہ کسی جھگڑے میں پڑنے والی شے نہیں۔ اردو کی خوبی یہی ہے کہ یہ کسی فساد کا سبب بن جائے تو اپنی خوبیاں کھو بیٹھے۔ اب رہ گئے وہ دوسرے لب و لہجے،...
June 02, 2017
وہ جو ہماری بچّی کی خاطر جان سے گئے

پچھلے دنوں ایک عجب واقعہ ہوا۔ واقعہ چھوٹا سا تھا۔ اب تو بڑے بڑے واقعات نے ہم پر اثر کرنا چھوڑدیا ہے۔ ہم پر کچھ گزر جائے تو دو چار روز نڈھال رہتے ہیں۔ اس کے بعد یوں لگتا ہے جیسے کچھ ہواہی نہیں۔ یہی سوچ کر خیال آتا ہے کہ یہ چھوٹا سا واقعہ بیان کروں یا نہیں۔ پھر سوچتا ہوںکہ کسی دور دراز گوشے میں ، کہیں دریاؤں کے پار، پہاڑوں کے پچھواڑے...
May 26, 2017
میرا نام بھی دہشت گردوںمیں لکھا گیا

برطانیہ کے شہر مانچسٹر میں پھر ایک دھماکہ ہوا۔ پھر کوئی سر پھرا ایک پرسکون جھیل میں پتھر پھینک گیا۔ خود جنت کی تمنّاکرتا ہو ا وہ شخص ایک پورے معاشرے کو دوزخ میں دھکیل گیا۔ بائیس نوجوان خاک و خون میں مل گئے۔ ان میں اکثر کی عمر سولہ برس یا اس سے بھی کم تھی۔ شہر کے بہت بڑے ہال میں ایک نوعمر امریکی گلوگارہ اپنی گائیکی سے بچوں کا جی بہلا...
May 19, 2017
برمی گاؤں سے برمنگھم تک

برمنگھم کہنے کو برطانیہ کا شہر ہے مگر قریب سے دیکھیں تو پاکستان کی کسی بستی جیسا نظر آتا ہے۔ گلیاں کی گلیاں اور بازار کے بازار پاکستان اور آزاد کشمیر کے باشندوں سے یوں آباد ہیں کہ ماشاءﷲ کہنے کو جی چاہتا ہے۔ پورے پچاس برس ہوا چاہتے ہیں جب میں پہلے پہل برمنگھم گیا تھا۔ اور کیسا عجب اتفاق ہے کہ پچھلے دنوں ایک بار پھر جانے کا اتفاق...
May 12, 2017
ڈنمارک میں اہلِ نظر کی تازہ بستیاں

سارے ہی ملک اپنی کسی نہ کسی خوبی کی وجہ سے مشہور ہوتے ہیں۔ یورپ کے ملک ڈنمارک نے کہانیاں کہنے کی وجہ سے شہرت پائی ہے۔ وہ جو حکایتیںہم بچپن میں پڑھا کرتے تھے، وہ جو قصّے شکل بدل بدل کر ہر علاقے میں رائج ہوئے، ان میں سے کتنے ہی ڈنمارک میں کہے گئے۔ کیسی عجیب دھن سمائی ہوگی جب اس ملک کے قصہ گواپنی سرزمین کی لوک کہانیاں اکٹھا کرنے کیلئے...
May 05, 2017
رب کا شکر اد ا کر بھائی

کئی نسلوں کو اردو زبان اور تہذیب سکھانے والے علم و حکمت کے بہت بڑے محسن اسماعیل میرٹھی نے یہی کوئی سو ا سو برس پہلے اپنی ایک یاد رہ جانے والی نظم میں رب کا شکر ادا کیا تھا کہ اس بھولی بھالی، سیدھی سادی گائے کی شکل میں رب نے ہمیں کیسی کیسی نعمتیں عطا کی ہیں۔ اُسی نے ہمیں دودھ کی دھاریں پلائیں۔ کل اس نے بن میں جو گھاس چری تھی وہ گائے کے...
April 28, 2017
بھارت کے مسلمانوں کے لئے کام کی باتیں

بھارت کے مسلمان مشکل میں پڑگئے ہیں۔ پہلے تو دوسروں کی باتوں پر چپ رہا کرتے تھے، اب اتنے دلیر ہوگئے ہیں کہ بحث کرنے لگے ہیں اور اپنی بات دلیل سے منوانے کی کوشش کرنے لگے ہیں۔ مگر سر پھروں سے بحث مباحثہ کرنے کا انجام کیا ہوتا ہے، ہم سب جانتے ہیں اور شاید کچھ زیادہ ہی جانتے ہیں۔ مجھے بھارت کے مسلمانوں کی اس دشواری کا احساس کسی جریدے میں...
April 21, 2017
انسان کے اندر کا وحشی

پچھلے دنوں ایک عجب مضمون ہاتھ لگا۔ ہم کبھی کے بھول بھال گئے کہ عالم اسلام میں ایک شخص نصیر الدین طوسی نام کا گزرا ہے۔ اسے درجنوں علوم پر عبور حاصل تھا۔ ان علوم میں تعمیرات، نجوم، حیاتیات، کیمیا، ریاضی، فلسفہ، طبیعات، معالجہ اور دینیات بھی شامل تھے۔ مسلم مفکّر ابن خلدون کا کہنا تھا کہ بعد کے ایرانی دانشوروں میں طوسی سب سے بڑا مفکر...
April 14, 2017
فیصلے میں تاخیر اور استخارہ؟

پاناما لیکس کے فیصلے میں اتنی دیر کیو ں ہورہی ہے، میں بتاتا ہوں۔ میرے لڑکپن کے دن تھے کہ میرے ایک بڑے بھائی شدیدبیمار ہوئے۔ انہیں ایسا بخار ہوا جو کسی حال نہیں اترتا تھا۔ میرے والد نے علاقے کے سرکردہ ڈاکٹروں کا ایک بورڈ بٹھایا جس نے بھائی کے معائنے کے بعد آپس میں صلاح مشورے کئے۔ وہ بے اثر ثابت ہوئے، آخر والد صاحب نے سہارنپور سے...
April 07, 2017
دیوانے کا خواب مگر غور طلب

بہت ہوگیا۔ انسان ایک حد تک برداشت کر سکتا ہے۔ سیاست کے نام پر وہ دھماچوکڑی مچی ہے کہ خدا کی پناہ۔ مطلب یہ کہ سیاست اور الیکشن دنیا کے دوسرے علاقوں میں بھی ہوتے ہیں مگر اس کا مطلب یہ تو نہیں کہ سیاسی چالبازیوں او ر عیاریوں کی پٹاری کھول کر رکھ دی جائے۔ بلا کا شور شرابہ ، قیامت کی ہلّڑ بازی، آستینیں چڑھی ہوئی، منہ سے جھاگ نکلتا ہوا۔...
March 31, 2017
دل راکھ ہوا جاتا ہے

جب غالب نے کہا تھا کہ ہر اک مکان کو ہے مکیں سے شرف اسد، تو غالب کے ذہن میں ایسا مکیں رہا ہوگاجو اپنے مکان کا دھیان رکھتا ہو، اسے بنا کر سنوار کر رکھتا ہو اور وہ ہر قسم کے خطروں سے بچا کر رکھتا ہو۔ اس بات سے خیال اس حاکم کی طرف جاتا ہے جو اپنی رعایا کا دھیان رکھتا ہو، ان کے دکھ درد سے واقف ہو اور ان کو ہر طرح کے اندیشوں سے محفوظ رکھتا...
March 24, 2017
کوئی ہماری طرح خوش رہ کر دکھائے

سوچتا ہوں اب چل کر ناروے میں رہا جائے۔ پتہ چلا ہے کہ وہاں کے لوگ دنیا کے تمام ملکوں سے زیادہ خوش رہتے ہیں۔ اب تک ڈنمارک والے سب سے آگے تھے مگر اس برس ناروے کے باشندے بازی لے گئے۔ یہ بات اقوام متحدہ کے ادارے کی رپورٹ میں کہی گئی ہے۔ اس رپورٹ میں اس سوال کا جواب دیا جاتا ہے کہ کسی ملک کے لوگ کتنے خوش باش ہیں اور کیوں۔ اس فہرست میں جو...